urdu maloomatUrdu Tipsدلچسپصحت

ڈپریشن اور بے چینی سے نجات

یہ بات تو سب ہی جانتے ہیں کہ مچھلی کھانا ہماری صحت کے لئے کس قدر فائدہ مند ہے، مچھلی میں موجود اومیگا تھری فیٹی ایسڈز کو ماہرین غذائیت نے انسانوں کے لئے بےحد مفید اور ضروری قرار دیا ہے، تاہم مچھلی کھانے کے ساتھ ساتھ ماہرین مچھلی کا تیل استعمال کرنے کی بھی تجویز دیتے ہیں

ماہرین کے مطابق مچھلی کا تیل صحت کیلئے انتہائی مفید ہے، اور یہ وہ واحد تیل ہے جس کی مدد سے کولیسٹرول لیول کو کم کیا جاسکتا ہے، یہی نہیں بلکہ مچھلی کے تیل میں موجود اومیگاتھری انسانی جسم کے مدافعتی نظام کو بہتر بنا کر ہمیں کھانسی، نزلہ، زکام اور سردی سے محفوظ رکھتا ہے

امراضِ قلب سے نجات

مچھلی کا تیل کولیسٹرول گھٹانے کے لئے مفید ہے اور منفی کولیسٹرول کو گھٹا کر ہم دل کی مجموعی صحت کو بہتر بنا سکتے ہیں، مچھلی کے تیل کو استعمال کر کے ہارٹ اٹیک کے خطرات کو کم کیا جا سکتا ہے۔

طاقت میں اضافہ

سردیوں میں مچھلی کا تیل پینا زیادہ فائدہ مند ہے اس سے جسم کو ایسی توانائی ملتی ہے جس سے مدافعتی نظام متحرک اور مضبوط ہو جاتا ہے، اس سے پٹھے مضبوط ہوتے ہیں اور یہ کمزور اعصاب کو بھی طاقتور بناتا ہے۔

سانس کے مرض میں مفید

اکثر لوگ سانس کے مرض میں مبتلا ہوتے ہیں لیکن موسمِ سرما میں ان کا یہ مرض شدت اختیار کر لیتا ہے مچھلی کے تیل میں موجود اومیگا 3 ایئر ویز کی سوزش دور کرنے میں مددگار ہے، جس سے دمہ کے مریضوں کو سانس لینے میں دشواری نہیں ہوتی جبکہ ماہرین صحت کا خیال ہے کہ اس ضروری ایسڈ سے بھرپور غذا دمہ کے مریضوں کے لیے مفید ہو سکتی ہے۔

ڈپریشن اور بے چینی سے نجات

آج کل ہر کسی کی زندگی میں گھر ,آفس ,مہنگائی اور کئی قسم کے مسائل ہیں جس کی وجہ سے انسان ڈپریشن کا شکار ہو جاتا ہے اور بے چینی یا نیند کی کمی ہوتی ہے ایسے میں مچھلی کا تیل اس صورتحال سے نکلنے کا بہترین زریعہ ہے۔ڈپریشن میں مبتلا افراد کے خون میں اومیگا 3 کی سطح کم ہوتی ہے اس لیے مچھلی کا تیل استعمال کرنے سے یہ مقدار پوری ہو جاتی ہے اور ڈپریشن سے نجات حاصل جاتی ہے۔

موٹاپے سے نجات

مچھلی کا تیل تیل تو ضرور ہے مگر اس میں ایسے فیٹس نہیں ہوتے جو وزن کو بڑھائیں یا چربی بنانے کا باعث بنیں، البتہ مچھلی کے تیل کا استعمال موٹاپے سے نجات دلانے میں اہم کردار ادا کر سکتا ہے مگر اس کے ساتھ ساتھ روزانہ کی بنیاد پر ورزش کرنا بھی بہت ضروری ہے۔

Show More

Related Articles

Leave a Reply

Your email address will not be published.

Back to top button