urdu maloomatUrdu Tipsصحت

کیا آپ جانتے ہیں کہ آپ یہ کھا کر دل کی بیماریوں سے اور کینسر سے محفوظ رہ سکتے ہیں

کاجو زیادہ تر شمال مشرقی برازیل کے ساحلی علاقوں میں پیدا ہوتا ہے۔ یہ چھوٹے بیج کی طرز اور گردے کی شکل کا پھل ہوتا ہے۔ کاجو آب و ہوا والی جگہوں پر بڑے پیمانے پر کاشت ہوتا ہے۔عام طور پر سری لنکا، کینیا، ہندوستان ، اور تنزانیہ جیسے ممالک میں بھی اس پھل کو اگایا جاتا ہے۔کاجو کے انسانی صحت پر حیرت انگیز مثبت اثرات مرتب ہوتے ہیں جن میں چند درج ذیل ہیں۔

1) دل کی بیماریوں سے نجات:
کاجو مضبوط دل ، مضبوط پٹھے، اعصاب، جسم میں موجود ہڈیاں اور منہ کے اندرونی مسائل کے لئے انتہائی کارآمد پھل ہے۔
یہ اینٹی آکسیڈنٹ سے مالا مال اور کولیسٹرول فری ہونے کی وجہ سے دل کو مختلف امراض سے محفوظ رکھتا ہے ۔اسکے علاوہ کاجو میں کچھ ایسے فیٹی ایسڈ موجود ہوتے ہیں جو اچھے کولیسٹرول کی مقدار میں اضافہ بھی کرتے ہیں ۔جس سے دماغ اور دل مضبوط ہوتا ہے اور اسٹروک کے امکانات بھی کم ہو جاتے ہیں ۔

2) ذیابیطس کے خطرے کو کم کرے:
کاجو میں شوگر کی مقدار نہایت کم ہوتی ہے ، اور کوئی نقصان دہ کولیسٹرول بھی نہیں ہے جس کی وجہ سے اسے ذیابیطس کے شکار لوگوں کے لئے مفید قرار دیا گیا ہے۔
نیوٹریشنز کی جانب سے 4 سے 5 کاجو روز کھانے کا مشورہ دیا گیا ہے۔

3) جلد کے لئے مفید:
کاجو کو اگر رات بھر بھگو کر رکھا جائے تو وہ دودھ میں تبدیل ہوجاتے ہیں۔ چکنائی اور مٹھاس سے پاک کاجو کے دودھ کےایک کپ میں صرف 25 کیلوریز، 2 گرام چربی ہوتی ہے۔
ایک کپ کاجو میں 615 کیلیوریز ہوتی ہیں۔ اس کو جس شکل میں بھی کھایا جائے وہ جلد کے لیے بہترین ہوتے ہیں اور سورج سے ہونے والے نقصانات سے تحفظ دیتے ہیں۔

4) کینسر سے بچائے:
تحقیق سے یہ ثابت ہوا ہے کہ کاجو میں ایسے اینٹی آکسیڈینٹ موجود ہوتے ہیں جن کی بدولت کینسر اور ٹیومر کے خاتمے میں مدد ملتی ہے۔

5) منہ کی صحت کے لئے مفید:
کاجو فاسفورس مہیا کرتے ہیں جو کہ ہڈیوں اور دانتوں کی صحت مند نشوونما کے لئے ضروری ہے۔ کاربوہائیڈریٹ اور فاسفورس چربی کو جذب کرتا ہے جبکہ یہ خون میں موجود مفید خلیوں کو مزید طاقتور بناتا ہے۔

6) خون کی کمی کو دور کرے:
کاجو غذائی آئرن کا ایک اہم ذریعہ ہیں جو جسم میں آکسیجن لے جانے اور مدافعتی نظام کے کام کرنے میں مدد فراہم کرتے ہیں۔ خوراک میں آئرن کی کمی سے انفیکشن، تھکاوٹ ، خون کی کمی کا خطرہ بڑھ سکتا ہے اس صورت میں کاجو کا استعمال مفید ہے۔

Show More

Related Articles

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Back to top button