urdu maloomatUrdu Tipsدلچسپصحت

کیلا تقریباً سب لوگوں کو ہی پسند ہوتا ہے لیکن آج آپ کو بتائیں گے کیلے کے چھلکے کے فائدے

کیلا تقریباً ہر ایک کا پسندیدہ ہوتا ہے کیونکہ اس پھل کا ذائقہ کبھی کڑوا یا کھٹا نہیں ہوتا بلکہ ہمیشہ میٹھا ہی ہوتا ہے۔ خاص طور پر بچے تو کیلے کو بہت شوق سے کھاتے ہیں اور مائیں بھی بچوں کو کبھی شیک کی صورت کیلا دے رہی ہوتی ہیں تو کبھی کسٹرڈ میں ڈال کر کیونکہ یہ پھل صحت کا خزانہ ہے اور نشوونما کے تمام بہترین اجزاء اس میں پائے جاتے ہیں۔ لیکن کیلے کا چھلکا جسے عام طور پر پھینک دیا جاتا ہے اس کے بھی بے انتہا فائدے ہیں۔ اس آرٹیکل میں ہم ان چھلکوں کے وہ فائدے بیان کرنے جارہے ہیں جو آپ کی جلِد کو ایسی تازگی اور رعنائی عطا کریں گے جو مہنگی سے مہنگی کریم بھی آپ کو نہیں دے سکتی۔

دانے اور نشانات ختم:
جِلد پر داغ دھبے یا دانے ختم کرنے کے لئے کیلے کے چھلکے کا ایک ٹکڑا لیں۔ اب اس پر ایک چمچ شہد اور ایک لیموں کا رس ٹپکائیں۔ اب اس چھلکے کو اپنی جلد پر دس سے بارہ منٹ تک ہلکے ہلکے سے مساج کریں۔ آدھا گھنٹا اسے خشک ہونے دیں اور پھر ٹھنڈے پانی سے دھو لیں۔ چند دن مسلسل استعمال کرنے سے پرانے داغ بھی ختم ہوجائیں گے۔

جھریاں ختم کرنے کے لئے؛
جھریاں اور بڑھتی عمر کے اثرات کم کرنے کے لئے اب مہنگی مہنگی کریموں پر پیسہ ضائع کرنے کی کوئی ضرورت نہیں کیونکہ وہی اجزاء آپ کو کیلے کے چھوٹے سے ٹکڑے سے بھی مل جاتے ہیں وہ بھی بنا کسی کیمیکل کے۔ لٹکی ہوئی جلد اورجھریوں کو واپس تازگی عطا کرنے کے لئے کیلے کے چھلکے کا چھوٹا ٹکڑا لیں اور اسے براہِ راست چہرے پر مل لیں اور خشک ہونے پر چہرے کو ٹھنڈے پانی سے دھو لیں۔

آنکھوں کی سوجن ختم؛
آنکھوں کے نیچے حلقے یا سوجن ہو جائے تو آنکھیں بند کرکے لیٹ جائیں اور کیلے کے چھلکے کے چھوٹے چھوٹے ٹکڑے کرلیں اور اسے آنکھوں کے نیچے رکھ لیں۔

کیلے کا چھلکا جلد کے لئے کیوں اچھا ہے؟
دراصل کیلے کا چھلکا بھی اپنے پھل کی طرح پوٹاشئیم سے بھرپور ہوتا ہے جو جِلد کی نشوونما بہترین انداز میں کرتے ہیں۔ پوٹاشئیم جلِد کو نرم و ملائم اور جھریوں سے پاک بناتا ہے۔ اس کے علاوہ چھلکے میں موجود لیکٹن نامی جز اپنے اندر اینٹی بیکٹیریل خصوصیات بھی رکھتا ہے جن کی وجہ سے مہاسوں اور سرخ دانوں سے چھٹکارا حاصل کرنے میں مدد ملتی ہے۔ کیلے کے چھلکے میں وٹامن سی اور بڑی مقدار میں وٹامن ای موجود ہوتا ہے جو جِلد کو ہر طرح سے صحت مند رکھنے میں مدد دیتا ہے۔

Show More

Related Articles

Leave a Reply

Your email address will not be published.

Back to top button