urdu maloomatUrdu Tipsدلچسپ

جسم میں کیلشیم کی کمی کو پورا کرکے ہڈیوں کو مضبوط بنائیں

ہڈیوں کو کیلشیم مہیا کرنے والی غذائیں*ریسرچ کے مطابق انسانی جسم میں 206ہڈیاں ہوتی ہیں،ان تمام ہڈیوں میں سے اگر ایک ہڈی بھی کمزور ہو جائے تو انسانی جسم کا توازن برقرار نہیں رہتا ہے۔ہڈیوں کی مضبوطی کے لیے کیلشیم بے حد ضروری جزو ہے۔دنیا میں ہرماں کی کوشش ہوتی ہے کہ بچے چاہے جتنے بھی بڑے ہو جائیں،کم از کم ایک گلاس دودھ روزانہ پئیں. آئیےآج ہم کچھ کیلشیم کے بارے میں جانتے ہیں کہ کیلشیم کیا ہے․

انسانی جسم میں زیادہ تر کیلشیم دانتوں اور ہڈیوں میں پایا جاتا ہےاس کے علاوہ خون میں بھی کیلشیم کافی مقدار میں پایا جاتاہے۔انسانی جسم میں ہڈیاں کیلشیم کے بینک کا کام کرتی ہیں۔جتنا کیلشیم کھایا جائے وہ بون بینک میں جمع ہوجاتاہے۔ہڈیوں کا یہ بینک خون کو اتنا ہی کیلشیم فراہم کرتاہے جتنا کہ اس کی سطح کو معمول پر رکھنے کے لیے خون کو ضرورت ہوتی ہے،اگر کیلشیم ضروری مقدار میں نہ کھایا جائے تو بون بینک خالی ہو جاتا ہے۔ اس کے لیے بہت ضروری ہے کہ کیلشیم سے بھر پور غذا کھائیں جو کہ خون میں کیلشیم کی سطح کو برابر رکھے اور ہڈی کے ذخیرے کو مضبوط بنائے۔کیلشیم کی کمی سے انسانی جسم میں کیا تبدیلی آتی ہے․․․؟کیلشیم کی کمی سے جسم میں موجود ہڈیاں،جوڑ اور دانت متاثر ہوتے ہیں۔ہڈیوں کا چٹخنا،ہڈیوں اورجوڑوں میں درد،ہاتھوں پیروں کا مڑ جانا یہ سب کیلشیم کی کمی کی علامات ہیں۔آج کل جدید طرز زندگی اور کیلوریز سے بھر پور غذاؤں (چاکلیٹ،کیک،کولڈڈرنک،جنگ فوڈز)کے باعث کیلشیم کی کمی ایک عام مسئلہ بنتی جا رہی ہے ۔

آج کل کے دور میں صرف بزرگ یا ادھیڑ عمر افراد ہی نہیں بلکہ نوجوان اور بچے بھی کیلشیم کی کمی سے کافی حد تک متاثر ہورہے ہیں۔ ہڈیوں کی مضبوطی اور جوڑوں کے درد سے محفوظ رہنے کے لیے جسم میں کیلشیم اور وٹامن ڈی کی طبعی مقدار موجود رہنا بہت ضروری ہے۔قدرتی طریقے سے حاصل کیا گیا کیلشیم صحت کے لئے زیادہ مفید اور فائدہ مند ثابت ہوتا ہے۔ کیلشیم کی مناسب مقدار جسم کو فراہم کرنے کے لئے کئی غذائیں کار آمدہیں۔*پتوں والی سبزیاں*سبزیاں وپھل صحت وتندرستی کے لیے ضروری ہیں۔کیلشیم کی کمی کو دور کرنے کے لئے پتوں والی سبزیاں انتہائی فائدہ مند ثابت ہوتی ہیں۔مثلاً گوبھی،مشروم،ساگ اور بروکلی وغیرہ۔ان سبزیوں کو باقاعدگی سے ڈائیٹ پلان میں شامل کیا جانا چاہیے ۔یہ جسم کو کیلشیم کی فراہمی میں معاون و مددگار ہیں۔*پھلیاں*پھلیاں انسانی جسم کو کیلشیم کی فراہمی کا ایک اہم ذریعہ ہیں۔سیم کی پھلی،مٹر،گوار کی پھلی،فرنچ بینز اور لوبیہ کی پھلی میں کیلشیم کے ساتھ پروٹین بھی وافر مقدار میں پایا جاتاہے۔*

دودھ*دودھ انسانی جسم میں کیلشیم کی کمی کو پورا کرنے کے لیے ایک بہترین ٹانک ہے۔اس میں کیلشیم بہت بڑی مقدار میں پایاجاتاہے۔ دودھ میں موجود کیلشیم انسانی ہڈیوں،جوڑوں اور پٹھوں کو مضبوط کرنے میں اہم کردار ادا کرتاہے،اس کے ساتھ ساتھ ڈیری اشیاء جیسے پنیر،دہی اور مکھن بھی جسم کو کافی مقدار میں کیلشیم فراہم کرنے کا ذریعہ ہیں۔ایک پاؤدودھ میں 30 فیصد کیلشیم اور وٹامن ڈی کی کثیر مقدار موجود ہوتی ہے۔ بوڑھے،بچے اور جوان ڈیری اشیاء کثرت سے استعمال کرکے صحت مند اور چاق وچوبند زندگی گزار سکتے ہیں۔دہی ایک ایسی غذا ہے جس میں کیلشیم کے ساتھ وٹامن ڈی بھی کثیر مقدار میں موجود ہوتا ہے۔صرف ایک کپ دہی میں 30 فیصد تک کیلشیم اور 20 فیصد وٹامن ڈی موجود ہوتاہے جو ان دونوں غذاؤں کی ایک دن کی جسمانی ضرورت کو پورا کرنے کے لیے کافی ہے۔*بادام*بادام کو روز مرہ کی خوراک میں شامل کرکے ہڈیوں کو صحت مند ومضبوط رکھنا ممکن ہے۔

بادام سے کیلشیم کے ساتھ ساتھ مناسب مقدار میں صحت بخش چکنائی بھی حاصل کی جاسکتی ہے جو مجموعی صحت کے لئے بہت مفید ہے۔*پنیر*کیلشیم سے بھر پور غذا پنیر ہے لیکن اس کا معتدل استعمال ہی صحت مند ہڈیوں کے لیے مفید ہو سکتاہے۔*پالک*ہڈیوں کو ضروری کیلشیم مہیا کرنے کے لئے ہفتے میں کم از کم ایک بار پالک ضرور کھائیں۔پالک میں نہ صرف 25 فیصد کیلشیم ہوتاہے بلکہ یہ فائبر،آئرن اور وٹامن اے سے بھی بھر پور ہوتاہے۔*مالٹے کا جوس*مالٹے کے جوس میں موجود اسکوربک نامی ایسڈ جسم میں کیلشیم کو جذب کرنے میں مفید بتایا جاتاہے

Show More

Related Articles

Leave a Reply

Your email address will not be published.

Back to top button